آگرہ کے جونیئر ڈاکٹروں نے سرپر ہیلمیٹ ، ہاتھ اُور سر میں پٹی باندھ کر کیا مریضوں کا علاج

جون 17صبح 6 بجے سے 18 جون صبح 6 بجے تک ڈاکٹر ہڈتال پر رہیں گے

Azhar Umri Agra

آگرہ، تاج نگری کے جونیئر ڈاکٹرہاتھ اُور سر پر پٹی باندھ کر اُور ہیلمیٹ پہن کر مریضوں کا علاج کر تے نظر آئے ، ان کو دیکھ کر مریض بھی پریشان اور حیران کن رہے، واضع ہوکہ کولکتہ میں جونیئر ڈاکٹر کے ساتھ مارپیٹ کے بعد ملک میں جاری تحریک میں ذاتی ڈاکٹر وں نے 17جون سے ہڈتال پر جانے کے لئے خبردار کیا ہے، اس صورت میں ہفتہ کو جونیئر ڈاکٹروں نے ایس این میں سر پر پٹی باندھ کر اُور ہیلمیٹ پہن کر مریضوں کا علاج کیا،اس کو دیکھ کر مریض حیران کن تھے،

آئی ایم اے سیکرٹری ڈاکٹر اُو پی یادو نے کہا کہ17جون صبح 6 بجے سے 18 جون صبح 6 بجے تک ڈاکٹر ہڈتال پر رہیں گے، اوپی ڈی میں مریض نہیں دیکھے جائیں گے، نئے مریض داخل نہیں کیئے جائیں گے، سنگین مریضوں کو ہی ایمرجنسی میں داخل کیا جائے گا

جونیئر ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ مریضوں کی تعدا د ذیادہ ہے، میڈیکل کالج میں بینادی سہولیات تک نہیں مل رہی ہیں ، اس صورت میں مویض کی موت پر اُس کے رشتہ دار اپنی ناراضگی ڈاکٹر پر ظاہر کرتے ہیں ، اُ ن لوگوں پر کاروائی ہونی چاہئے ، ساتھ ہی میڈکل کالج میں جونیئر ڈاکٹر وں کو محفوظ کیا جانا چاہئے ،

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *