دہشت گرد اسلام ، مسلمان اُور اُن کی عبادت گاہوں سے بہت ذیادہ نفرت کارتے ہیں، مفتی مدثرخان قادری

Azhar Umri Agra

آگرہ، نیوزی لینڈ میں کرائسٹ چرچ کی دومساجد پر حملے میں شہید ہوئے ۴۹ لوگوں کے لئے سنی مرکز العلوم غیرب نواز نگلہ میواتی تاج گنج میں مفتی مدثرخان قادری کی قیادت میں دُعا کا اہتمام کر مساجد پر ہوئے حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ، مفتی نے حملہ میں زخمی ۹ بھارتی لوگوں اُور تمام دُنیاں کے مسلمین کی سلامتی کی دُعا کی، مفتی مدثر خان قادری نے کہا کہ بے گناہوں پر ظلم کرنے والے دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ہے اُور نہ کوئی ملک ، نمازیوں پر جس طرح حملہ کیا گیا ، اُس کی مذمت بین الاقومی سطح پر ہونی چایئے ۔حملے میں زخمی بھارتیوں کی مدد کے لئے حکومت جلد مناسب قدم اُٹھائے،اس حملے پر دنیاں کی خاموشی سوالیانشان ہے؟مسجد میں جس طرح بزرگ، خواتین اُور بچوں کو نشانہ بنایا گیا تھا، واضع طور سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ دہشت گرد اسلام ، مسلمان اُور اُن کی عبادت گاہوں سے بہت ذیادہ نفرت کارتے ہیں،
حاجی انیس کہا کہ دہشت گردوں کے غصے اور مایوسی کی طرف یہ حملہ یہ ظاہر کرتا ہے کہ دہشت گردی کا سب سے بڈا شکار مسلمان ہیں،حملہ آوروں کو سخت سے سخت سزا دی جائے، اُور شہید نمازیوں خاندان کی نیوزی لینڈ حکومت مالی امدادی مدد جاری کرے،دنیاں کی تمام مساجد اُور عبادت گاہوں کی سلامتی کو بہتر بنایا جائے، حملہ میں زخمی بھارتیوں کی مناسب دیکھ بھال اور تحفظ کو یقینی بنائیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *