عقیدہ ختم نبوت ہی ایمان کی کسوٹی ہے, الحاج محمد سعید نوری

فرقہ قادیانیت کے خلاف 18 ستمبر کو سنی ہری مسجد گوونڈی میں تاجدارِ ختم نبوت کانفرنس

Azhar Umri Agra

عوام الناس سے زیادہ تعداد میں شرکت کی اپیلعوامی بیداری کیلئے دارالعلوم محی الاسلام فیضان اشرف میں ہوئ اہم میٹنگ
ممبئی ,فرقہ قادیانیت کی خفیہ سرگرمیاں جس طرح سے ملک و بیرون ملک جاری ہیں اس سے مذہبی حلقوں میں تشویش کا اظہار کیا جارہا ہے آئے دن قادیانی گروہ نوجوان نسل کو عقیدہ ختم نبوت سے دور کرنے کی منظم کوشش کررہا ہے کیونکہ اسلام دشمن ممالک خصوصاً اسرائیل و امریکہ کی فنڈنگ سے قادیانی مشینری مکمل طور پر سرگرم عمل ہیں جس کے سدباب کے لیے رضا اکیڈمی ودیگر سنی تنظمیں مسلسل مساجد ومدارس میں علماء کرام سے اس فتنہ کو ختم کرنے کے لیے میٹنگ کررہی ہیں تاکہ کسی طرح سے امت مسلمہ کو اس فتنے سے محفوظ کیا جائےاس سلسلے میں آج گوونڈی میں دارالعلوم محی الاسلام فیضان اشرف پدما نگر میں ایک اہم میٹنگ ہوئ جس میں کثیر تعداد میں علماء کرام وائمہ مساجد نے شرکت کی
مذکورہ میٹنگ کی قیادت کرتے ہوئے رضا اکیڈمی کے چئیرمن قائد ملت الحاج محمد سعید نوری صاحب نے کہا کہ ہمیں کسی بھی حال میں فتنہ قادیانیت کی سرکوبی کرنی چاہیے
کیونکہ نوجوان نسل قادیانیت کے دام فریب میں بہت جلد آرہا ہے یہ فرقہ اسلام کا لیبل لگا کر لوگوں کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہا ہے لہذا ہمیں اس فرقہ قادیانیت کے خلاف منصوبہ بند طریقے سے کام کرنے کی ضرورت ہے جنرل سکریٹری رضا اکیڈمی
محمد سعید نوری صاحب نے مزید کہا کہ اس فرقے کی قیادت امریکہ واسرائیل کررہے ہیں جس کے اشارے پر ہی افتادہ علاقوں میں یہ پہونچ کر مالی لالچ کے ذریعے مرزائیت کو فروغ دے رہے ہیں لہذا ہمارے علماء کرام کو بھی لٹریچر سوشل میڈیا کے ذریعے قوم مسلم کے شاہین صفت نوجوانوں کو بچانے کیلیے بھرپور جدو جہد کرنے کی ضرورت ہے
آپ نے آخر میں زور دیکر کہا کہ گوونڈی کی سرزمین پر 18 ستمبر کو ہونے والی کانفرنس
بنام تاجدارِ ختم نبوت قادیانیت کے تابوت میں کیل ٹھونکنے کا کام کرے گی
لہذا ممبئی عظمیٰ کے ائمہ مساجد وعلماء کرام سے مذکورہ کانفرنس میں شرکت کی اپیل کرتے ہیں سنی ہری مسجد کے خطیب وامام حضرت مولانا محمود عالم رشیدی صاحب نے 18 ستمبر کو ہونے والے تاجدارِ ختم نبوت کانفرنس کے حوالے سے کہا کہ کانفرنس کی تیاریاں آخری مراحل میں ہیں علماء ومشائخ سے رابطے ہوچکے ہیں جن کی آمد سے فتنہ قادیانیت کے حوالے سے گوونڈی کی عوام کو آگاہ کیا جائے گا رشیدی صاحب نے کہا کہ
ہمیں افسوس ہے کہ آج ووٹ بینک کے لیے لوگ قادیانیوں سے بھی رابطے قائم کررہے ہیں
جس سے ممبئی کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے ہیں علمائے کرام وائمہ مساجد کو چاہیے کہ ایسے چہروں کے بارے میں عوام الناس کو باخبر کریں ورنہ اقتدار میں آنے کے بعد خفیہ طریقے سے یہ نام نہاد مسلم لیڈر فرقہ قادیانیت کے آلہ کار بن کر کام کریں گے
جس سے مذہب اسلام کو شدید نقصان پہونچے گا جس پر ابھی سے کام کرنے کی ضرورت ہے
حضرت مولانا محمد عباس رضوی صدر آل انڈیا مساجد کونسل کرلا نے کہا کہ آج رضا اکیڈمی مسلسل دیگر مذہبی تنظیموں کے اشتراک سے پورے ممبئی میں فتنہ قادیانیت کے سرکوبی کے لیے جدو جہد کررہی ہے لہذا تمام تنظیموں کو ایک ساتھ ہوکر فتنہ قادیانیت کے خلاف ملک گیر پیمانے پر تحریک چلانے کی ضرورت ہے آپ نے اس موقع پر اُردو اخبارات کے ذمہ دران کو بھی خصوصی مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ختم نبوت کے حوالے سے اب تک جو بھی کوشش ہوئی ہیں اردو پرنٹ میڈیا نے بھی بخوبی اپنا کام کرتے ہوئے عوام الناس کو باخبر کرنے کی کوشش ہے جس کے لئے ہم تہ دل سے ممنون و مشکور ہیں حضرت مولانا عبد الحفیظ علیمی پرنسپل دارالعلوم محی الاسلام فیضان اشرف نے قرآن وحدیث کی روشنی میں ختم نبوت کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللّٰہ تعالیٰ نے نبی کریم صلی اللّٰہ علیہ وسلم کے بعد نبوت کے دورازے کو بند کردیا ہے اب اگر کوئی پاگل مرزا غلام احمد قادیانی کی طرح دعویٰ نبوت کرے تو وہ زندیق کے سوا کچھ نہ ہوگا حضرت مولانا زاہدالرحمن چیتا کیمپ نے کہا کہ ہمیں اس سلسلے میں گاؤ ں دیہاتوں کا دورہ کرکے تبلیغ کا دائرہ وسیع کرنا چاہیے
کیونکہ گاؤں قصبہ جات کے لوگ ناخواندہ ہونے کی وجہ سے سمجھ نہیں پاتے
جس کی وجہ سے یہ سیدھے سادھے لوگ قادیانیوں کے دام فریب میں آجاتے ہیں جن کو بچانا ہم سب کی مذہبی ذمہ داری ہے حضرت مولانا شاہد رضا مصباحی تعمیر ملت مسجد نے بھی عوام الناس کو اس بدترین فرقہ سے بچنے کی اپیل کی آ پ نے کہا کہ یہ اسلام کا لیبل چسپاں کر کے مسلمانوں کو گمراہ کررہے ہیں جس پر ہمیں ان سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے
مصباحی صاحب نے کہا کہ آج اسکول و کالج کے طلباء زیادہ تر ان کے لٹریچر وغیرہ کو پڑھ کر بہک جاتے ہیں جس کی وجہ سے یہ تو خود مذہب اسلام سے دور ہوتے ہیں ساتھ ہی گھر خاندان کو بھی قادیانی فرقہ میں ڈال دیتے ہیں لہذا علماء کرام کو اسکول و کالج کے مسلم طلبا ء کو بھی خصوصی تربیت دینے کی ترکیب بنانی چاہی آخر میں میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے صدیق العلماء حضرت مولانا صدیق حسین اشرفی صاحب سربراہ دارالعلوم محی الاسلام فیضان اشرف نے کہا کہ آج فتنہ قادیانیت ایک بیماری کی طرح پھیل رہی ہے جس کے شکار ہمارے نوجوان بنتے جارہے ہیں آج مہاراشٹر کے کئ اضلاع قادیانیوں کے لپیٹ میں ہیں
لہذا ہمیں گاؤں گاؤں جاکر لوگوں کو مرزائیت کے باطل نظریات سے واقف کرانا چاہئے جب تک ہم قادیانیوں کے حقائق سے پردہ نہیں اٹھائیں گے جب تک عوام کو ان سے نجات نہیں دلا پائیں گے اشرفی صاحب نے مزید کہا کہ آج ہم لاکھوں روپئے غیر ضروری کاموں میں خرچ کردیتے ہیں جب کہ ہمیں چاہیے کہ فرقہ قادیانیت کے رد میں ہمارے علماء ومشائخ نے جو کتابیں تحریر کی ہیں انہیں مختلف زبانوں میں شائع کرکے فتنہ قادیانیت کے پردہ کو چاک کرنا

حضرت مولانا مہدی حسن حضرت مولانا امجد علی حضرت قاری غلام نبی صاحبان نے بھی
18 ستمبر کو ہونے والے تاجدارِ ختم نبوت کانفرنس کو کامیاب بنانے کی اپیل کی میٹنگ میں
حضرت مولانا قاری غلام سرور مولانا قاری مشیر الحضرت قاری محمد عمران
خطیب وامام چیتا کیمپ مسجد قاری محمد اقبال کنزالایمان مسج
مولانا علاء الدین کنزالایمان مسجد
قاری کوثر حسن
ولانا قاری شمیم نوری مسجد حضرت مولانا رضاء المصطفیٰ امجدی ناظم تعلیمات دارالعلوم محی الاسلام فیضان اشرف ولانا غلام مصطفٰی صاحب رضوی مولانا قاری صدام حسین صاحب
حضرت ماسٹر ضیاء المصطفیٰ صاحب حافظ جنید رضا
عرفان بھائی لکی احمد رضا چمبور قاری عبد الرحمٰن ضیائی دیگر حضرات شریک تھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *