پاکستان کی شازش کا منہ توڈ جواب دیا جائے ، مفتی مدثر خان قادری 

Azhar Umri Agra

پاکستان کی شازش کا منہ توڈ جواب دیا جائے ، مفتی مدثر خان قادری
پارلیمنٹ فورس کے سپاہیوں کو مکمل فوجی کا درجہ حاصل ہو ، راشد نسیم صدیقی
آگرہ ، گزشتہ روز پلوامہ میں ہوئے دہشت گردی حملے میں شہیدوں کی شہادت پر تاج نگری کی عوام میں ناراضگی اُور غصہ ہے ،ہر خاص وعام اپنی طرح سے غصہ کا اظہار کر رہاہے، پولیس اسٹیشن سے لیکر اسکول ، بازار اُور دفترمیں شہید سپاہیوں کو خیراج عقیدت پیش کیا جار ہا ہے،
تنظیم علمائے اہل سنت کے سیکریٹری مفتی مدثر خان قادری نے سنی مرکز کی نوری جامعہ مسجد واقع نگلہ میواتی آگرہ میں نماز جمعہ کو خطبہ (تقریر ) کے دوران کشمیر میں ہوئے اب تک کے سب سے بڈے دہشت گردانہ اور قاہرانہ حملہ کی سخت الفاظ میں مذمت کی اور اس حملہ میں شہید ہوئے جوانوں کو خیراج عقیدت پیش کیا، مفتی نے کہا کہ ہم تمام اُور ملک کا ہر شخص اہل خاندان کے دکھ درر میں برابر کے شریک ہے، ہم تمام حکومت ہند سے مطالبہ کرت ہیں کہ پاکستان کی شازش کا منہ توڈ جواب دیا جائے ، اس پر تمام نمازیوں نے تائید کی، نماز کے بعد تعزیتی نششت کا انعقاد کیا گیا جس کو خطاب کرتے ہوئے قاری شمشیر برکارتی نے کہا کہ اس حملہ پر کسی قسم کی کوئی سیاست نہیں ہونی چاہئے، ملک ہر شخص شہید ہوئے سپاہی کے خاندان کے ساتھ ہے ، ہم اُن کے غم کو ختم تو نہیں کرسکتے لیکن اُن کے غم کا اشتراک کر سکتے ہیں ،
عمری پبلک اسکول آگرہ میں صبح اسمبلی کے درران اسکول کے طلباء کے ۲ منٹ خاموش ہوکر پلوامہ میں ہوئے دہشت گردی حملے میں شہیدوں کو خیراج عقیدت پیش کیا، اس موقع پرمینیجر اظہر عمری نے کہا کہ اس حملہ میں تاج نگری کے کہرئی گاؤں رہائشی کوشل کشور (48) کی بھی شہادت ہوئی ہے، انہوں نے کہا کہ شہید کوشل سی آر پی ایف میں نائک ( اے ایس آئی ) کے عہدے پر تھے، اس وقت وہ ۵۱۱ بٹالین سلی گوڈی میں تعینات تھے، کچھ روز قبل ہی کشمیر میں ۶۷ بٹالین میں تعیناتی ہوئی تھی، شہید کوشل کی اہلیہ اُور بچے گروگرام میں رہتے ہیں، اُن کے تین بچوں میں دو بیٹے اُور ایک بیٹی ہے، بیٹی کی شادی ہوگئی ہے، ایک بیٹا ابھیشیک روس سے ایم بی بی ایس کر رہا ہے، ایک بیٹا والدکے ساتھ گروگرام مین رہتا ہے،
الپ سنکھیک اُور دلت مہاسبھاکے قومی ترجمان راشد نسیم صدریقی نے پلوامہ میں سی آر پی ایف پر ہوئے دہشت گردانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ مہاسبھا کا یہ مطالبہ رہا ہے کہ پارلیمنٹ فورس کو بھی آرمی ، ایئر فورس ، نیوی کی طرح تمام سہولیت حاصل ہو ں ، اُن کے شہیدوں کو بھی آرمی ، نیوی ، ایئر فورس کی طرح شہید کادرجہ حاصل ہو ، کیوں کہ آج تک آسا نہیں ہوا،مہاسبھا مرکزی حکومت سے مطالبہ کرتی ہے کہ پلوامہ میں شہید ہوئے ہر شہید کے خاندان کو وہ تما م سہو لیات حاصل ہو، جو ایک فوجی کو ملتی ہیں، جس سے اُس کے خاندان کو کسی قسم کی کوئی دقت نہ ہو،

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *