کانگریس کے بھارت بند کا ملا-جلا اثر

Asia Times Desk

نئی دہلی،10ستمبر(یواین آئی)پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ اور بڑھتی مہنگائی کے خلاف کانگریس کے اعلان پر پیر کو بھارت بند کا ملک کی مختلف ریاستوں میں ملا-جلا اثر رہا۔بند کو 21مختلف سیاسی پارٹیوں نے اپنی حمایت دی ہے۔

قومی دارالحکومت دہلی میں کانگریس صدر راہل گاندھی کی قیادت میں اہم اپوزیشن پارٹیوں نے دہلی میں راج گھاٹ سے رام لیلا میدان تک ریلی نکالی۔ریلی کے رام لیلا میدان پر پہنچنے کے بعد وہاں دھرنا دیا گیا۔دھرنے میں ترقی پسند اتحاد(یوپی اے)کی سربراہ سونیا گاندھی ،سابق وزیراعظم من موہن سنگھ،کانگریس کےسینئر لیڈر غلام نبی آزاد اور احمد پٹیل،نیشنلسٹ کانگریس کے صدر شرد پوار،جنتا دل(یونائیٹیڈ)کے لیڈر شرد یادو ،عام آدمی پارٹی کے لیڈر کے سنجے سنگھ،ترنمولکانگریس کے لیڈر سوکھیندو شیکھررائے اور دیگرلیڈر شامل ہوئے۔
بہار میں بھارت بند کی حمایت میں کانگریس،راشٹریہ جنتا دل(آرجے ڈی)،ہندوستانی عوام مورچہ(ہم)،جن ادھیکار پارٹی(جاپ)،سماجوادی پارٹی(ایس پی)اور لوکتانترک جنتا دل(ایل جےپی) کےلیڈر اور کارکنان صبح سے ہی سڑکوں پر اتر آئے۔بند کے حامیوں نے کئی مقامات پر سڑک اور یلوے ٹریفک روکنے اور دکانوں کو بند کرانے کی کوشش کی۔جاپ کے کارکنان نے راجیندر نگر ٹرمینل پرمشرقی وسطی ریلوے کے ملازمین کو حاجی پور لے جانے والی بس کے شیشے توڑ دئے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *