ڈاکٹر سیّد احمد خاں ’شانِ طب ایوارڈ‘ سے سرفراز

فوڈ اور دواؤں کی ملاوٹ پر قابو پائے بغیر ’سب کے لیے صحت‘ کے مشن پر قابو پانا ممکن نہیں: کیسری ناتھ ترپاٹھی

Asia Times Desk

کولکاتا، 15 فروری۔
فوڈ اور دواؤں کی ملاوٹ پر قابو پائے بغیر ’سب کے لیے صحت‘ مشن پر قابو پانا ممکن نہیں ہے اور ملاوٹ کرنے والوں کو سخت سے سخت سزا ملے، اس کے لیے قانون بنایا جانا لازمی ہے۔ یہ اظہار خیال ’عالمی یوم یونانی میڈیسن‘ کی مناسبت سے آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس (مغربی بنگال) اور نیچروویدا کی جانب سے بھاشابھون، نیشنل لائبریری، کولکاتا میں منعقدہ پہلے انٹرنیشنل سمینار میں یونانی ڈاکٹروں سے خطاب کرتے ہوئے مغربی بنگال کے گورنر جناب کیسری ناتھ ترپاٹھی نے کیا۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ طب یونانی کا فروغ ضروری ہے، یہ سستا اور طاقتور طریقۂ علاج ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ طب یونانی صدیوں پرانا آزمایا ہوا طریقۂ علاج ہے۔
اپنے خطاب میں جناب کیسری ناتھ ترپاٹھی نے نیچروویدا کے حوالے سے مزید کہا کہ یہ کولکاتا کی مشہور دواساز کمپنی ہے اور اس کے نوجوان منیجنگ ڈائرکٹر ڈاکٹر خالد سیف اللہ بہت فعال ہیں۔

پروگرام کے آغاز پر نیچروویدا کے منیجنگ ڈائرکٹر ڈاکٹر خالد سیف اللہ نے تعارفی کلمات پیش کیے جبکہ صدارت کے فرائض انٹرنیشنل یونانی طبّی کانگریس بنگلہ دیش کے صدر پروفیسر اے کے محبوب الرحمن ساقی نے انجام دیے۔ سمینار میں مرکزی ریاستی وزیر زراعت و فلاح و بہبود برائے کسان اور پنچایتی راج جناب پرشوتم کے روپالا، جناب ندیم الحق (رکن پارلیمنٹ)، جناب وویک گپتا (رکن پارلیمنٹ)، جناب احمد حسن عمران (رکن پارلیمنٹ) وغیرہ نے بھی مہمان ذی وقار کے طور پر شرکت کی۔ اس موقع پر آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کی جانب سے یادگار مجلہ ’عالمی یوم یونانی میڈیسن‘ 2018 کا اجرا عمل میں آیااور ڈاکٹر خالد محمود صدیقی (سابق ڈپٹی ڈائرکٹر جنرل سی سی آریوایم، نئی دہلی) کو لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ، پروفیسر روح الامین (استاد، طبیہ حبیبیہ کالج اینڈ ہاسپٹل ڈھاکہ، بنگلہ دیش) کو حکیم ابن سینا انٹرنیشنل ایوارڈ، پروفیسر ایم اے فاروقی (استاد، پی جی ڈپارٹمنٹ آف معالجات، گورنمنٹ نظامیہ طبیہ کالج حیدرآباد) کو حکیم ابوالقاسم زہراوی انٹرنیشنل ایوارڈ، ڈاکٹر مسرور علی قریشی (سائنٹسٹ لیبل 4، سی سی آریوایم) کو ڈاکٹر عبدالرزاق ایوارڈ، پروفیسر فضل اللہ قادری (سابق استاد، گورنمنٹ یونانی میڈیکل کالج، پٹنہ) کو علامہ کبیرالدین ایوارڈ اور ڈاکٹر و حکیم سیّد افروز حسین (کولکاتا) کو ڈاکٹر سیّد اشتیاق احمد ایوارڈسے سرفراز کیا گیا۔ جب کہ نیچروویدا گروپ کی جانب سے آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کے سکریٹری جنرل ڈاکٹر سیّد احمد خاں کی مسلسل تیس سالہ طبّی خدمات اور 18 اگست 2010 کو ہر سال یوگا، آیورویدا اور ہومیوپیتھی کی طرح مسیح الملک حکیم اجمل خاں کے یوم پیدائش پر یونانی میڈیسن ڈے منائے جانے کا خاکہ پیش کرنے کے اعتراف میں ’شانِ طب ایوارڈ‘ سے سرفراز کیا گیا۔ واضح ہو کہ مذکورہ ایوارڈز مغربی بنگال کے گورنر جناب کیسری ناتھ ترپاٹھی نے تفویض کیے۔

اس موقع پر ڈاکٹر مجیب الرحمن (جنرل سکریٹری، طبّی کانگریس مغربی بنگال) نے درج ذیل تجاویز پیش کیں جسے اتفاق رائے سے منظور کیا گیا۔ (۱) دہلی میں واقع مسیح الملک حکیم اجمل خان کے قائم کردہ (1916) آیوروید اینڈ یونانی طبیہ کالج کو ڈیمڈ یونیورسٹی آف مسیح الملک حکیم اجمل خاں کے طور پر ترقی دی جائے۔ (۲) مغربی بنگال میں گورنمنٹ یونانی میڈیکل کالج قائم کیا جائے۔ (۳) حکومت مغربی بنگال پہلے مرحلے میں کم از کم ہر ضلع میں دو یونانی ڈسپنسریز قائم کرے۔ (۴) محکمہ آیوش، حکومت مغربی بنگال کے تحت ڈپٹی ڈائرکٹر یونانی کے تقرر کو یقینی بنایا جائے۔ (۵) طب یونانی میں خالی پڑی اسامیوں پر جلد ازجلد تقرر کو یقینی بنایا جائے۔ تمام شرکاء کا شکریہ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس (مغربی بنگال) کے صدر ڈاکٹر محمد نظام الدین نے ادا کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *