بستی میں فیض خلیل آبادی کے اعزاز میں شعری نشست

Asia Times Desk

بستی :  (ایشیا ٹائمز) جدید طرز فکر کے شاعر فیض خلیل آباد کے اعزاز میں فاروق اعظم پبلک اسکول ملت نگر، گاندھی نگر بستی میں ایک شعری نشست کا انعقاد عمل میں آیا ۔اس پروگرام میں فیض آباد سے تعلق رکھنے والے معروف شاعر شاہد جمال نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت فرمائی ۔ جبکہ سہ ماہی دہلیز کے ایڈیٹر اور اردو شاعری میں ایک نئی صنف سخن” تسطیر“ کے موجدڈاکٹر طارق منظور کی شرکت نے اس شعری نشست کو اور بھی با وقار بنادیا ۔محترم رفیق صاحب کی صدارت میں ہونے اس شعری نشست میںصاحب اعزاز اور مہمان شعراءکو سامعین نے کئی کئی بار اصرار کر کے سنا ۔اس خوبصورت ادبی شعری نشست کا اہتما م کہنہ مشق استاد شاعر تعزیر بستوی نے کیا تھا۔سامعین نے کثیر تعداد میں شرکت فرماکر پروگرام کو کامیابی و کامرانی ہمکنار کیا۔ ذیل میں شعراءکے منتخب کلام درج کئے جا رہے ہیں :

دوائیں کھا رہا ہوں نیکیوں کی

مرے اعمال پیلے پڑ گئے ہیں

فیض خلیل آبادی

پڑ کے فن کاری میں برباد نہیں ہونا ہے

شاعری کرنی ہے استاد نہیں ہونا ہے

شاہد جمال

مویشیوں کے گلے میں تو ڈال دی رسّی

مگر یہ آدمی خود بے لگام چلتا ہے

تعزیر بستوی

گرانی پی گئی چہرے کی شادابی بھلا کیا غم

ہمارے دیش کی سنسد کا تو موسم سہانا ہے

ڈاکٹرطارق منظور

گل نے پھر خواب میں گلفام سے باتیں کی ہیں

چاند پر بیٹھ کے آرام سے باتیںکی ہیں

انوار پارسا

جام آنکھوں سے اتنا پلاو

¿ نہ تم
مئے کی مستی نہیں تو اتر جائے گی

آر ۔سی۔ راجا

جو نکلے گا سورج تو جلنا پڑے گا

کہاں تک یہ سر پہ گھٹائیں رہیں گی

ونود کمارہر شیپ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *