جمعیۃ علماء ہند خدمت خلق کا دوسرا نام ہے /مولانا ظہیرانوار قاسمی

جمعیۃ علماء ضلع بستی کے زیر اہتمام جامع مسجد گاندھی نگر شہر بستی میں اہم مشاورتی اجلاس منعقد

Asia Times Desk

 بستی(پریس ریلیز): جمعیۃ علماء ضلع بستی کے زیر اہتمام جامع مسجد گاندھی نگر شہر بستی میں ایک اہم مشاورتی اجلاس منعقد ہوا، سرپرستی مولانا ظہیرانوار قاسمی مہتمم دارالعلوم الاسلامیہ بستی ،صدارت مولانا عبدالقیوم قاسمی صدر جمعیۃ علماء ضلع بستی جبکہ نظامت کے فرائض مولانا قیام الدین القاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء ضلع بستی نے انجام دی۔ اجلاس کا آغاز مولانا فیضان احمد کی تلاوت کلام اللہ سے ہوا۔
اجلاس میں جمعیۃ علماء ہند کی موجودہ خدمات ، پروگرام اور پالیسیوں کو سراہا گیا، ممبر سازی مہم کو کامیاب بنانے کیلئے تحصیل سطح پر لائحہ عمل تیار گیا۔ ووٹنگ کی اہمیت اور ووٹرلسٹ میں ناموں کی شمولیت پر زور دیا گیا۔ طلاق ثلاثہ کے متعلق سرکاری آرڈیننس کو ملت کیلئے تشویشناک قرار دیا گیا اور اس کیلئے مذمتی قرار دادبھی پیش کیا گیا۔ مولانا ظہیرانوار قاسمی نے ممبر سازی کی اہمیت وافادیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جمعیۃ علماء ہند ایک ایسی پُروقار تاریخ ساز تنظیم ہے جسکی خدمات آزادی سے لیکر ابتک تاریخ کے صفحات پر پھیلے ہوئے ہیں۔
انہوں نے اس تنظیم کی تنظیمی دھانچے کو مضبوط اور مربوط کرنے کیلئے ضلع وار ممبر سازی کو ضروری قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ اس تنظیم کی خصوصیت ہے کہ اس کا نیٹ ورک پورے ہندوستان میں پھیلا ہوا ہے، ممبر سازی کی اہمیت کو اُجاگر کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم ضلعی ، تحصیل اور بلاک سطح پر جمعیۃ کیلئے ممبر سازی کا کام کرتے ہیں تو اس سے تنظیم میں جغرافیائی پائیداری اور تقویت پیدا ہوگی۔ انہوں نے تمام شرکاء اجلاس کو ممبر سازی کی مہم میں حصہ لینے کی تلقین کی ۔
 سینئر صحافی شعیب الرحمن شبو بھائی نے جمعیۃ علماء ہند کی موجودہ کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس وقت پورے ملک میں یہ تنظیم انسانیت کی بنیاد پر جو خدمات انجام دے رہی ہے، اور کوئی تنظیم اس کے مقابل میں نظر نہیں آتی۔ انہوں نے کہا کہ اسوقت ووٹ کی اہمیت اور ووٹرلسٹ میں ناموں کی شمولیت پر جمعیۃ علماء ہند کا یہ انقلاب انگیز تحریک سیکولرزم اور ملک کی جمہوریت کی تحفظ کیلئے ایک اہم پیش رفت ہے۔
شبو بھائی نے ضلع کے تمام شہریوں کو اجلاس کے پلیٹ فارم سے اس ووٹر بیداری مہم میں حصہ لینے کی دعوت فکر دی۔ شہر سکریٹری جمعیۃ علماء بستی ماسٹر محمداشرف علی نے ووٹرلسٹ کی درستگی اور ناموں کی شمولیت کے متعلق ضروری ہدایات اور خاکہ پیش کیا۔ ضلع خازن مولانا حفیظ الرحمن قاسمی نے دوسالہ ٹرم کے حساب وکتاب کی وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ضلع جمعیۃ کے پاس کوئی باضابطہ فنڈنگ اسکیم تو نہیں ہے، لیکن پھر بھی خدمت خلق کے جذبہ سے اراکین جمعیۃ کی کاوشوں اور انکی محنتوں سے مالیہ فراہمی کیلئے اسباب ووسائل پیدا کرلئے جاتے ہیںکہ جن سے وقتاً فوقتاً سیلاب وآفات متاثرین، غرباء ومساکین کی تعاون اور انکے علاج ومعالجہ کیلئے تعاون کئے جاتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ جمعیۃ علماء ہند خدمت خلق کا دوسرا نام ہے۔ ضلع خازن نے ملک وملت کی خدمت کو عبادت سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ عبادت فقط مسجدوں تک محدود نہیں ، بلکہ معاملات، حالات اور انسانیت کی بنیاد پر اُسوہ نبویؐ کے تناظر میں قوم وملت کی خدمت کرنا سب سے بڑی عبادت ہے۔ شہر صدر جمعیت علماء بستی ڈاکٹر منصور احمد قاسمی نے ابھی حالیہ پارلیمنٹ پیش ہونیوالے طلاق ثلاثہ بل کی مذمت کرتے ہوئے کہ اسطرح کا سرکاری آرڈیننس شریعت میں مداخلت ہی نہیں بلکہ آئین ہند کے متصادم اور اس کے سراسر خلاف ہے۔ انہوں نے تمام شرکاء اجلاس سے اس آرڈیننس کیخلاف پرزور مذمت کرنے کی اپیل کی۔
ضلع نائب صدر مولانا عبدالحلیم مظاہری نے ضلع جمعیت کی کاموں کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ ممبر سازی مہم حالات کے پیش نظر نہایت ہی ضروری ہے۔ تحصیل صدر ہریا مولانا نبی سرور قاسمی نے شرکاء اجلاس سے مخاطب ہوکر کہا جمعیۃ علماء ہند کی تاریخ ساز خدمات کو اُجاگر کرنے اور اس کے تعار ُف کیلئے دیہاتوں او رمواضعات میں تحصیل سطح پر
بڑے اجلاس منعقد کئے جائیں ، جس سے ضلع سطح پر جمعیۃ علماء مضبوط اور مربوط ہوسکے ۔
 اجلاس کے مہمان خصوصی استاذ الشعراء شاعر اسلام مولانا مجیبؔ بستوی نے اپنے بیان میں جمعیۃ علماء ہند یونٹ ضلع بستی کے اراکین کو تحریک تبریک پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت جمعیۃ علماء ضلع بستی پورے عزم وحوصلہ کیساتھ کاربند ہے۔
انہوں نے جمعیۃ علماء پر اپنی لکھی ہوئی نظم پیش کی، جسے شرکاء اجلاس نے خوب سراہا۔ مولانا قیام الدین القاسمی نے سابقہ کاروائی پیش کی اور کہا کہ اس وقت ملک اور ملت کے سامنے زبردست چیلنج ہے ، لمحہ کی خطا زندگی بھر کیلئے حسرت بن سکتی ہے۔ انہوں نے جمہوریت اور سیکولر اقدار کی تحفظ کے خاطر جمعیۃ کے پیش کردہ فارمولے کو اپنانے کی ترغیب دی۔ مولانا عبداللہ ، مولانا محمدصدیق، مولانا اشرف جہانگیر، حافظ عبدالعزیز ، اسعداللہ ببلو، مولانا شبیر احمد مظاہری، مولانا وصی اللہ قاسمی، مولانا محفوظ الرحمن، مولانا محمداحمد، مولانامحمدعلی، مفتی جمیل احمد، مولانا ابوالکلام مظاہری، مولانا ارشداللہ، حافظ عبدالرحمن، مولانا عبدالحفیظ قاسمی، مفتی علاء الدین ، سمیر خان، تصور حسین قاسمی، مولانا رضوان اللہ، ماسٹر محمدیعقوب، احمد علی ، محمدسعد عرف سدّو، جاوید بھائی، انور علی،حافظ احمداللہ کے علاوہ شہر کے معزز حضرات شریک اجلاس رہے۔ مولانا عبدالقیوم قاسمی کی کلمات دعائیہ پر اجلاس کا اختتام ہوا۔ ماسٹر محمداشرف علی نے شرکاء اجلاس کا شکریہ ادا کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *