جامعہ کے طالب علم محسن جاوید کی تصویر یونیسکوعالمی تصویری مقابلے میں منتخب

اس تصویری مقابلے میں دنیا بھر سے ایک سو سے زائد ممالک کے 14 سے 25برس کی عمر کے نوجوانوں نے  6625 تصویریں بھیجیں تھیں

Asia Times Desk

 نئی دہلی : جا معہ ملیہ اسلامیہ کے طالب علم محسن جاوید کی ایک تصویر اقوام متحدہ کے تعلیمی،سائنسی و ثقافتی تنظیم یونیسکو کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے بین الاقوامی تصویری مقابلے میں منتخب اور شائع ہوئی ہے۔
’یوتھ آئیز آ ن دی سلک روڈ‘ کے موضوع پر منعقد اس تصویری مقابلے میں دنیا بھر سے ایک سو سے زائد ممالک کے 14 سے 25برس کی عمر کے نوجوانوں نے  6625 تصویریں بھیجیں تھیں۔
یونیسکو نے سلیکٹ کی محسن کی  ہمایوں کے مقبرہ کی یہ تصویر
سات عالمی شہرت یافتہ فوٹوگرافروں پر مشتمل ایک بین الاقوامی جیوری نے ان میں سے60بہترین تصویروں کا انتخاب کیا‘ جسے ایک خوبصورت کتابی شکل میں شائع کیا گیا ہے۔محسن جاوید کی تصویر ان 60منتخب تصویروں میں سے
ایک ہے۔ انہوں نے دہلی کے ہمایوں کا مقبرہ کے پانی میں عکس کی تصویر مقابلے کے لئے بھیجی تھی۔
 محسن جاوید کوکتاب کی ایک کاپی ارسال کرتے ہوئے یونیسکو نے اپنے تہنیتی پیغام میں کہا ہے ’آپ کی تصویر ان 6625 تصویروں میں سے ایک تھی جس نے اپنی معیاری‘ تخلیقی اور تنوع کی وجہ سے بین الاقوامی سلیکشن کمیٹی کومتاثر کیا۔ اپنی اس کامیابی پر یونیسکو کی جانب سے مبارک باد قبول کریں۔“
یونیسکو نے مزید بتایا ہے کہ جن 60تصویروں کو منتخب کیا گیا ہے انہیں دنیا کے مختلف ملکوں میں نمائش میں پیش کیا جائے گا۔ اب تک چین‘ افغانستان‘ آذر بائیجان‘ عمان‘ روسی فیڈریشن‘ ترکمانستان اور پیرس میں واقع یونیسکو کے ہیڈکوارٹر میں اس طرح کی نمائش کا انعقاد کیا جاچکا ہے۔ آنے والے دنوں میں دنیا کے دیگر ملکوں میں بھی یہ تصویری نمائش منعقد کی جائے گی۔
خیال رہے کہ محسن جاوید جامعہ پالی ٹیکنک میں الیکٹریکل انجینئرنگ کے فائنل ایر کے طالب علم ہیں۔فوٹو گرافی ان کا مشغلہ ہے۔انہیں کئی مقابلوں میں انعامات مل چکے ہیں۔امریکہ کی ویزوول میڈیا کمپنی گیٹی امیجیز کے زیر اہتمام تصویریں فراہم کرنے والی کمپنی آئی اسٹاک پر  ان کی متعدد تصاویر موجود ہیں۔ جب کہ جرمنی کے پبلک انٹرنیشنل براڈکاسٹر ادارہ ڈوئچے ویلے(ڈی ڈبلیو) کی ویب سائٹ اور ہندوستان کے متعدد جرائد میں بھی ان کی تصویریں شائع ہوچکی ہے۔ محسن جاوید کو ان کی اس کامیابی پر اساتذہ اور ساتھیوں نے مبارک باد دی ہے اور ان کے روشن مستقبل کی دعا کی ہے۔
 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *