نام کی تبدیلی ترقی نہیں بلکہ تنزلی کی علامت ہے :نواب کاظم علی خان 

Asia Times Desk

نئی دہلی : امبیڈکر نیشنل کانگریس کے قومی صدر نواب کاظم علی خان نے شہروں اور اسٹیشنوں کے نام تبدیل کئے جانے پر سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان عقریب امبیڈکر نیشنل کانگریس پارٹی صدر جمہوریہ کو اس سلسلے میں ایک میمورنڈم دے گی جس میں تجویز رکھنا ہے کہ کیوں نہ اس ملک نام تبدیل کرکے بدھستان کردیا جائے ۔
مہاتما بدھ کا پیغام شانتی اور امن تھا اس لئے ہو سکتا ہے کہ بدھستان نام رکھ دینے سے ملک میں شانتی اور امن قائم ہوجائے ۔اسٹیشنوں اور شہروں کے نام تبدیلی کا کام مرکزی حکومت کے دائرہ اختیار میں ہے لیکن یو پی کے وزیر اعلی مرکز کو نظر انداز کرکے خود ہی نام تبدیل کررہے ہیں،اس سلسلے میں مرکز کی خاموشی ٹھیک نہیں ہے۔
وہ ایسا کرکے ہندتو کلچر کو بچانے کا نام دے رہے ہیں جبکہ ہمارا ملک سیکولر ہے جس کا کوئی مذہب نہیں ہے ،یہ ایک غیر دستوری عمل ہے ۔نام تبدیلی کا عمل خالص مذہب کی بنیاد پر کسی حکومت کے شیان شان نہیں ہے ۔نام کی تبدیلی ترقی نہیں بلکہ تنزلی کی علامت ہے ۔اس طرح کے عمل سے سماج کئی ٹکروں میں تقسیم ہو جائے گا جس سے ملک میں انارکی اور نفرت پھیلے گی ۔

جبکہ آج ہمارے ملک میں بے روزگاری بڑھ رہی ہے ،لوگ بھوکے مررہے ہیں ،کسان خودکشی کررہا ہے ،بااثر لوگوں کے ہاتھوں عورتوں کی عزت لوٹی جارہی ہے ۔ملک میں اقتصادی ایمرجنسی کی حالت ہے ۔ہر طرف لوٹ مار ہو رہی ہے ۔حکومتوں کو چاہئے کہ وہ ملک میں یکجہتی قائم کرنے کے لئے کام کریں ، ملک کے مسائل کو حل کریں ،فالتو اور بیکار ،نفرت سے آمیز اقدام سے باز رہیں یہی اصل راج دھرم ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *