ترک صدر کا پہلا دورہ سوڈان،اہم معاہدوں پر دستخط

Asia Times Desk

سوڈاں : ترک صدر رجب طیب ایردوان نے اپنے دورہ سوڈان کے دوران  ہم منصب محمد عمر البشیر سے خرطوم میں ملاقات کی۔

یاد  رہے کہ  سن 1956ء میں آزادی کے بعد کسی ترک صدر کا سوڈان کا یہ پہلا دورہ ہے۔

خبر  کے مطابق ،ترک صدر کا خرطوم پہنچنے پر شاندار استقبال کیا گیا۔

بعد ازاں صدر ایردوان اور عمر البشیر نے بالمشافہ  ملاقات کی جس میں دو طرفہ تعاون کے فروغ سمیت باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا۔

ترک صدر کے دورہ سوڈان کے موقع پر دونوں ملکوں کے درمیان 12 سیاسی، اقتصادی اور سماجی شعبوں میں تعاون کی بھی منظوری دی گئی۔

 اس دورے کی ایک اور اہم بات یہ ہے کہ ترکی اور سوڈان نے دو طرفہ   مشاورتی تعاون کونسل کے قیام کا بھی اعلان کیا ہے۔

ترک صدر کے ہمراہ سوڈان کے دو روزہ دورے کے دوران حکومت کے اعلیٰ عہدیدار اور کاروباری شخصیات بھی شامل ہیں۔

ترک صدر اپنے اس دورے کے دوران مشرقی شہر بورتسوان اور تاریخی شہر سواکن کا بھی دورہ کریں گے۔

 سواکن سے ترک خلافت عثمانیہ کی بھی یادیں وابستہ ہیں۔

دونوں رہنماؤں نے ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے بھی خطاب کیا۔ مقامی اور غیرملکی صحافیوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے دونوں صدور نے کہا کہ وہ سوڈان اور ترکی کے درمیان تعلقات کے ایک نئے باب کا آغاز کررہے ہیں۔

 صدر عمر البشیر نے کہا کہ یہ ایک تاریخی دورہ ہے کیونکہ یہ دورہ ترکی کے صدر کررہے ہیں۔

ان کی حکومت اور سوڈانی قوم کے لیے یہ خوشی کی بات ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ترکی اور سوڈان میں گہرے تاریخی تعلقات صدیوں پرانے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سوڈانی حکومت اور قوم ترک صدر کی عالم اسلام کے مسائل میں دلچسپی کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *